نوازشریف کو کچھ ہوا توذمہ داری وزیراعظم کی ہوگی، احسن اقبال

پاکستان مسلم لیگ ن کے جنرل سیکریٹری اور سابق وفاقی وزیر ا احسن اقبال نے کہا ہے کہ عمران خان کے انتقام اور نفرت کی وجہ سے نواز شریف اس حال کو پہنچے ، اگر نواز شریف کی صحت کو کوئی نقصان پہنچاتو براہ راست ذمہ داری عمران خان پر ہوگی ۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل بینچ نے نوازشریف کی العزیزیہ اسٹیل ملز کیس میں سزاطبی بنیادوں پر 8 ہفتوں کے لیے معطل کردی۔ عدالتی فیصلے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) نے عدالت سے کہا سزا معطلی پر اعتراض نہیں لیکن اسے وقت کی قید میں لایاجائے ۔

انہوں نے بتایا کہ غالباً عدالت نےیہ کہا ہےکہ مزیدضمانت کی ضرورت ہو تو صوبائی حکومت سے رجوع کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ حکومت نواز شریف کے کیس میں کسی قسم کا انصاف کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہے ، نواز شریف کو جیل میں طبی سہولتیں ڈاکٹروں نے لازمی قرار دی تھیں ۔ احسن اقبال نے کہا کہ امریکا میں عمران خان میں بیان دیا کہ نواز شریف سے سہولتیں واپس لوں گا، جس کے بعد حکومت نے طبی سہولتیں واپس لینا شروع کردیں۔ رہنما مسلم لیگ ن کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی صحت کو کوئی نقصان پہنچاتو براہ راست ذمہ داری عمران خان پر ہوگی کیونکہ عمران خان کے انتقام اور نفرت کی وجہ سے نواز شریف اس حال کو پہنچے ۔

قبل ازیں نواز شریف کا علاج کرنے والے ڈاکٹر عدنان نے اسلام آباد ہائیکورٹ کو بتایا تھا کہ نوازشریف دل، گردے، اسٹروک، شریانوں کےسکڑنےکا شکار ہیں، ‏مجھے خدشہ ہے کہ نوازشریف کو کہیں کھو نا دیں۔ اس موقع پر ایم ایس سروسز اسپتال نے عدالت کو بتایا کہ نوازشریف کی حالت اس وقت بھی خطرے میں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں