مردہ قرار دیئے جانے والا 95سالہ شخص آخری رسومات میں زندہ ہوگیا

راجھستان( آن لائن ) راجستھان سے تعلق رکھنے والے 95 سالہ بزرگ شہری کے اہل خانہ اس وقت ہکا بکا رہ گئے جب ڈاکٹر کی جانب سے مردہ قرار دیے جانے کے بعد وہ شخص اپنی آخری رسومات میں غسل کے وقت اٹھ کر بیٹھ گیا۔بھکتن والا کی دھانی کے رہائشی بڈھ رام سینے میں درد کی وجہ سے بیہوش ہوئے تھے اور اہل خانہ کی جانب سے انہیں ایک نجی ڈاکٹر کو دکھایا گیا تھا۔ جس نے معائنے کے بعد انہیں مردہ قرار دیا تھا۔ڈاکٹر کی جانب سے موت کی تصدیق کے بعد 95 سالہ برزگ شخص کے اہل خانہ نے رشتے داروں کو آگاہ کیا اور آخری رسومات کے لیے مذہبی پیشوا کو بلایا۔اس کے بعد جب گھر کے افراد کے روایتی طریقے سے سر کے بال صاف کررہے تھے اور بڈھ رام کے جسم کو آخری غسل دے رہے تھے کہ اچانک اٹھ کر انہوں نے سب کو حیران کردیا۔مردہ قرار دیے گئے شخص کے جسم پر جیسے ہیں ٹھنڈا پانی ڈالنا شروع کیا وہ حیران کن پر طور پر زندہ ہوگئے۔اس حیران کن واقعے کے حوالے سے بڈھ رام کے بڑے بیٹے بالو رام کا کہنا تھا کہ مذہبی پیشوا کی جانب سے رسومات کی ادائیگی کر رہے تھے جبکہ بابر روایت کے مطابق اہل خانہ کے افراد کے سر کے بال صاف کر رہا تھا اور رسم و رواج کے مطابق ہم اپنے والد کے جسم کو غسل دینے ہی والے تھے کہ اچانک وہ اٹھ گئے۔انہوں نے کہا کہ جیسے ہی ان کے والد کے جسم پر پانی ڈالنا شروع کیا تو وہ کانپنے لگے اور ہر کوئی حیران ہوگیا، جس کے بعد انہیں بستر پر لیٹایا گیا اور پھر وہ اٹھ کر ہم سے باتیں کرنے لگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں