اشتہارات

‘ملک کو اندھیروں سے نکالنے اور ایٹمی دھماکے کرنے والا پیشیاں بھگت رہا ہے’

site_admin

کہتے ہیں جو شخص ایٹمی دھماکے کرے ملک کو اندھیروں سے نکالے وہ عدالتوں میں پیشیاں بھگت رہا ہے۔ پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاء کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ واجد ضیاء چک شہزاد کئی گھنٹے مشرف کی رہائش گاہ کھڑا رہتا تھا۔ میں خود جے آئی ٹی میں جا کر پیش ہوا بطور وزیر اعظم لیکن مشرف اس کو کئی گھنٹے نہیں ملتا تھا واجد ضیاء سے پوچھ لیں۔

انہوں نے مزید کہا 1972 کے دور کی چیزیں نکال کے پوچھ رہے ہیں تاہم 1999 اور 2013 کا کچھ پوچھیں تو سمجھ بھی آئے۔ عمران خان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا تھا کہ عمران خان گلی محلوں میں جا کر مہم کی بات کرتے ہیں وہ سب گلی محلوں کے ہی رہ گئے ہیں۔ یہ بھی بذات خود ایک تبدیلی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے حالیہ رویے پر افسوس ہے۔ بلاول غلط کہتے ہیں کہ ن لیگ چارٹر آف ڈیموکریسی سے پیچھے ہٹ گئی۔ مجھے معلوم نہیں میرے ساتھ کیا ہو رہا ہے میڈیا اپنا کردار ادا کرے اور میرے کیس کو سامنے لائے۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت میں پاکستانی ہائی کمشن کے ساتھ جو ہو رہا ہے افسوس ناک عمل ہے۔ یہ آج کا مسئلہ نہیں ہمیشہ کا ہے کب تک چلے گا۔ یہ سب ادھر بھی ہو رہا ہے اور ادھر بھی ہو رہا ہے ۔


اس موقع پر پرویز رشید نے کہا کہ میاں صاحب نے اپنے تمام وعدے پورے کیے اور وعدے پورے کرنے پر وہ آج عدالتوں میں پیشیاں بھگت رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے 2013 کے الیکشن سے پہلے کہا تھا کہ کھیلوں کے میدان آباد کریں گے جبکہ روزگار فراہم کیا جائے گا اور خوشحالی لائیں گے۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر نے بھی گفتگو کی جو نیب ریفرنسز میں بھی نامزد ہیں۔

کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز شیخ رشید نے آئین توڑنے کا مشورہ دیا جو شخص آئین توڑنے کا عندیہ دے کیا وہ پاکستانی ہے۔ ان کے بیان پر سپریم کورٹ سے ازخود نوٹس لینے کی درخواست کریں گے۔

کیپٹن (ر) صفدر نے اعلیٰ عدالت سے اپیل کی کہ شیخ رشید کے بیان پر ازخود نوٹس لیا جائے اور شیخ رشید نے کس کی ایماء پر آئین توڑنے کی بات کی ہے۔

دیگر متعلقہ خبریں

اشتہارات