اشتہارات

جان کا خطرہ تھا، اس لیے استعفی دیا،نظر بندی کی تردید

site_admin

بیروت / ریاض : مستعفیٰ لبنانی وزیراعظم سعد حریری نے نظر بندی کی تردید کرتے ہوئے جلد لبنان واپسی کا اعلان کردیا۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق لبنان کے مستعفیٰ وزیراعظم سعد الحریری نے ریاض میں نظربندی کی تردید کردی اور جلد اپنے ملک واپسی کا اعلان کیا۔

ریاض میں پریس کانفرنس کے دوران استعفیٰ دینے کے کئی روز بعد سعودی دارالحکومت میں ہی لبنانی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے سعد الحریری نے کہا کہ  وہ بالکل آزاد ہیں اور جہاں جانا چاہیں جاسکتے ہیں، اور وہ جلد لبنان بھی جائیں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ استعفیٰ دینے کی ضروری آئینی کارروائی بڑھائی جانی چاہیے اور وہ لبنان پہنچ کر اس حوالے سے کارروائی مکمل کریں گے۔

ایک سوال پر سعد الحریری نےاستعفیٰ واپس لینے کا عندیہ بھی دیا اور کہا کہ اگر میں استعفیٰ واپس لے لوں تو حزب اللہ خطے کے تنازعات میں لبنان کی عدم مداخلت کی پالیسی کا احترام کرنا ہوگا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سعودی ولی عہد شہزادہ سلمان سے بہترین تعلقات ہیں، وہ میرے بھائی کی طرح ہیں۔ ادھر لبنان کے صدر نے سعد حریری کی وطن واپسی تک استعفا قبول کرنے سے انکار کردیا ہے۔

واضح رہے کہ استعفی دینے کے بعد یہ سعد حریری کا پہلا انٹرویو ہے، جو انہوں نے لبنانی ٹی وی کو دیا۔ اس سے قبل سعویہ عرب میں موجود لبنان کے وزیر اعظم سعد حریری کی ریاض میں نظر بندی سے متعلق افواہیں گردش کر رہی تھیں۔

دیگر متعلقہ خبریں

اشتہارات